نوٹ: یہ لفظ ایک ماں کی امانت ہیں۔ ان کے ان دیکھے دکھ کا احساس کرنے کی ایک کاوش! مجھے بس انہیں آپ تک پہنچانا تھا۔ جو مرد اپنی بیویوں کو بیٹا پیدا نہ کر سکنے کے جرم میں ذہنی اذیت دیتے ہیں، ان سے کہنا ہے۔۔۔۔کہ اپنی اماں کو بتائیں۔۔۔مجرم ان کی بہو نہیں آپ خود ہیں!!!

ماؤں کی بھی قسمیں ہوتی ہیں
ایک وہ جو بیٹے کا تاج سر پہ سجائے
خود پر نازاں!
دوسری وہ جو اس تاج سے محروم
اور بیٹی کی ماں ہونے پر نادم
۔
ایسا کب ہوگا کہ ماؤں کی کوئی قسم نہ ہوگی؟
صرف ممتا کی تسکین ہوگی
اور
نہ کوئی ماں ہوگی مغرور
اور نہ کوئی سماج کے ہاتھوں مجبور
جب بیٹی رحمت کہلائی گئی ہے
تب سوال کیسا جواب کیسا؟

میمونہ عباس خان